بصارت

کتاب : بڑے بچوں کے لئے

مصنف : خواجہ شمس الدین عظیمی

مختصر لنک : https://iseek.online/?p=36440

بصارت

بصارت چشم سے زیادہ بصیرت قلب پر فکری اور عملی توجہ مرتکز رہنی چاہیے۔

 

اسماء الہیہ کے خواص

کوتاہیوں اور خطاوں کے مرض میں جو پرہیز ضروری ہے وہ یہ ہے حلال روزی کا حصول،جھوٹ سے نفرت،سچ سے محبت،اللہ کی مخلوق سے ہمدردی،ظاہر اور باطن میں یکسانیت،منافقت سے دل بیزاری،سخت دل اللہ کی مخلوق کو کمتر جاننے والا اور خود کو دوسروں سے برتر سمجھنے والا بندہ اسمائے الہیہ کے خواص سے فائدہ حاصل نہیں کر سکتا۔

 

فطرت کی راہنمائی

جب ہم وجدان میں قدم بڑھا دیتے ہیں تو فطرت ہماری رہنمائی کرتی ہے اور عقل اس کی پیروی کرتی ہے۔

یہ مضمون چھپی ہوئی کتاب میں ان صفحات (یا صفحہ) پر ملاحظہ فرمائیں: 65 تا 65

بڑے بچوں کے لئے کے مضامین :

ِ 1 - روحانیت تفکر، فہم اور ارتکاز  ِ 2 - لاشعور  ِ 3 - اچھائی اور بُرائی  ِ 4 - جانوروں سے ممتاز معاشرہ  ِ 5 - انبیاء کی طرزِ فکر  ِ 6 - وحدت الوجود اور وحدت الشھود  ِ 7 - اختیارات  ِ 8 - نائب  ِ 9 - نفس کی پہچان  ِ 10 - ذات کی اصل کیا ہے  ِ 11 - نام اور مظاہرہ  ِ 12 - ہر اسم اللہ کی صفت ہے  ِ 13 - انسان ممتاز کیسے ؟  ِ 14 - فکر انسانی  ِ 15 - زمان متواتر اور زمان غیر متواتر  ِ 16 - نگاہ  ِ 17 - نوع سوچ  ِ 18 - روشنی  ِ 19 - دولتِ  ِ 20 - محبت  ِ 21 - محبت کی لطیف لہریں  ِ 22 - روشن اور واضح اصول  ِ 23 - روح سے واقفیت  ِ 24 - مسائل  ِ 25 - قدر و منزلت  ِ 26 - اصلاح  ِ 27 - فیضان قدرت  ِ 28 - ھم رشتہ  ِ 29 - آفاقی قوانین  ِ 30 - سونا چاندی  ِ 31 - طرز فکر  ِ 32 - مراقبہ  ِ 33 - ارادہ  ِ 34 - دنیاوی معاملات  ِ 35 - شرک  ِ 36 - فطری عقل  ِ 37 - کفرانِ نعمت  ِ 38 - اللہ رگ جان  ِ 39 - سیرت النبی  ِ 40 - اللہ سے تعلق  ِ 41 - ارتقاء  ِ 42 - طرز کا انتخاب  ِ 43 - نصب العین  ِ 44 - اطمینان قلب  ِ 45 - روحانی تقاضے  ِ 46 - اعصابی تناؤ  ِ 47 - مخلص دوست  ِ 48 - خدا سے واقفیت  ِ 49 - خدمت  ِ 50 - عارضی چیز  ِ 51 - آسمانی کتابیں  ِ 52 - قرآن کی راہنمائی  ِ 53 - ہستی کے تابع  ِ 54 - ڈر  ِ 55 - جھوٹ سچ  ِ 56 - روحانی واردات و کیفیات  ِ 57 - صداقت  ِ 58 - خود آگہی  ِ 59 - وقت  ِ 60 - واجدان کی دنیا  ِ 61 - خوف زدہ زندگی  ِ 62 - ازل تا ابد حرکت  ِ 63 - روح کا لباس  ِ 64 - محرومی یا ناکامی کا افسوس  ِ 65 - بصارت
سارے دکھاو ↓

براہِ مہربانی اپنی رائے سے مطلع کریں۔

    Your Name (required)

    Your Email (required)

    Subject (required)

    Category

    Your Message (required)