اللہ رگ جان

مکمل کتاب : بڑے بچوں کے لئے

مصنف : خواجہ شمس الدین عظیمی

مختصر لنک : https://iseek.online/?p=36386

اللہ رگ جان

اللہ رگ جاں سے زیادہ قریب ہے۔اللہ ابتداء ہے اللہ انتہا ہے،اللہ ظاہر ہے،اللہ باطن ہے،اللہ ہر چیز پر محیط ہے۔

 

اللہ کےلئے

خاتم النبین صلی اللہ علیہ وسلم نے یہ حرف راز بتایا ہے کہ بندہ خالق کو اسی وقت پہچان سکتا ہے۔جب اس کا ہر عمل صرف اور صرف اللہ کے لیئے ہو۔اس میں کوئی غرض شامل نہ ہو۔

 

خود فریبی

ہمیں اپنے اندر باہر،ظاہر،باطن ہر طرف نظر دوڑا کر یہ بھی دیکھنا ہو گا کہ ہم کس حد تک خود فریبی میں مبتلا ہو چکے ہیں۔نفس نے ہمیں ہمارے رب سے دور تو نہیں کر دیا؟ایسا تو نہیں کہ دوسروں کو نصیحت کے عمل نے ہمیں خود اپنے آپ سے بے خبر کر دیا ہے۔

یہ مضمون چھپی ہوئی کتاب میں ان صفحات (یا صفحہ) پر ملاحظہ فرمائیں: 38 تا 38

بڑے بچوں کے لئے کے مضامین :

ِ 1 - روحانیت تفکر، فہم اور ارتکاز  ِ 2 - لاشعور  ِ 3 - اچھائی اور بُرائی  ِ 4 - جانوروں سے ممتاز معاشرہ  ِ 5 - انبیاء کی طرزِ فکر  ِ 6 - وحدت الوجود اور وحدت الشھود  ِ 7 - اختیارات  ِ 8 - نائب  ِ 9 - نفس کی پہچان  ِ 10 - ذات کی اصل کیا ہے  ِ 11 - نام اور مظاہرہ  ِ 12 - ہر اسم اللہ کی صفت ہے  ِ 13 - انسان ممتاز کیسے ؟  ِ 14 - فکر انسانی  ِ 15 - زمان متواتر اور زمان غیر متواتر  ِ 16 - نگاہ  ِ 17 - نوع سوچ  ِ 18 - روشنی  ِ 19 - دولتِ  ِ 20 - محبت  ِ 21 - محبت کی لطیف لہریں  ِ 22 - روشن اور واضح اصول  ِ 23 - روح سے واقفیت  ِ 24 - مسائل  ِ 25 - قدر و منزلت  ِ 26 - اصلاح  ِ 27 - فیضان قدرت  ِ 28 - ھم رشتہ  ِ 29 - آفاقی قوانین  ِ 30 - سونا چاندی  ِ 31 - طرز فکر  ِ 32 - مراقبہ  ِ 33 - ارادہ  ِ 34 - دنیاوی معاملات  ِ 35 - شرک  ِ 36 - فطری عقل  ِ 37 - کفرانِ نعمت  ِ 38 - اللہ رگ جان  ِ 39 - سیرت النبی  ِ 40 - اللہ سے تعلق  ِ 41 - ارتقاء  ِ 42 - طرز کا انتخاب  ِ 43 - نصب العین  ِ 44 - اطمینان قلب  ِ 45 - روحانی تقاضے  ِ 46 - اعصابی تناؤ  ِ 47 - مخلص دوست  ِ 48 - خدا سے واقفیت  ِ 49 - خدمت  ِ 50 - عارضی چیز  ِ 51 - آسمانی کتابیں  ِ 52 - قرآن کی راہنمائی  ِ 53 - ہستی کے تابع  ِ 54 - ڈر  ِ 55 - جھوٹ سچ  ِ 56 - روحانی واردات و کیفیات  ِ 57 - صداقت  ِ 58 - خود آگہی  ِ 59 - وقت  ِ 60 - واجدان کی دنیا  ِ 61 - خوف زدہ زندگی  ِ 62 - ازل تا ابد حرکت  ِ 63 - روح کا لباس  ِ 64 - محرومی یا ناکامی کا افسوس  ِ 65 - بصارت
سارے دکھاو ↓

براہِ مہربانی اپنی رائے سے مطلع کریں۔

    Your Name (required)

    Your Email (required)

    Subject (required)

    Category

    Your Message (required)